سنی لیون کاحامدمیرکوفون،کیابات ہوئی ،جان کرآپ دنگ رہ جائیں گے

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)نجی ٹی وی چینل ’’جیو نیوز‘‘ کے سینئر صحافی و تجزیہ نگار حامد میرپرجب 2014میں حملہ ہواتودنیابھرسے مذمت کاسلسلہ شروع ہوگیا۔مختلف اہم شخصیات نے انہیں فون کرکے خیریت معلوم کی جہاں مختلف سیاستدانوں نے ان کے خلاف ہونے والے اس حادثے کی مذمت کی وہیں شوبز سے تعلق رکھنے والے مختلف افرادنے
ان کی خیریت معلوم کی یہاں تک کہ بھارت کی معروف اداکارہ سنی لیون نے بھی حامدمیرکوفون کیااوران سے خیریت دریافت کی ۔ان دنوں میں حامدمیرکامعاملہ زبان زدعام تھا۔انہیں گولی لگنے کے بعدایک رائے سامنے آئی کہ پاکستان میں ہرشخص کوآزادی ہونی چاہیے تاکہ وہ اپنانقطہ نظربیان کرسکے۔انہوں نے اپنی فون کال میں حامدمیرسے کہاکہ جوبھی ہو جائے میں آپ کے ساتھ ہوں ۔ دنیامیں ہرشخص کوہرمعاملے پراپناآزادانہ رائے دینے کاحق ہوناچاہیے ۔جبکہ حامدمیرنے کہاکہ میرے اپنے ساتھی میرے خلاف ہیں جبکہ اس کے جواب میں سنی لیون نے کہامشہورشخصیات کے ساتھ اس طرح کے واقعات پیش آتے رہتے ہیں ۔اس واقعے کے بعدنجی ٹی وی جیونے فوج کے خلاف مسلسل پروپیگنڈ اکیاتھا۔الزام لگانے کے بعدبھارتی میڈیاکی جانب سے حامدمیراورنجی ٹی وی کوبھرپورحمایت ملی تھی ۔بھارتی سیاستدانوں نے بھی اس معاملے کوخوب اچھالااورجتناممکن ہواانہوں نے پاکستان کے خلاف زہراگلنے میں کوئی کسرنہ چھوڑی ۔ایک بھارتی صحافی نے کہاتھاکہ حامدمیرایک بے باک صحافی ہیں انہیں پاکستان کے ریاستی اورغیرریاستی اداروں کی جانب سے خطرات لاحق ہیں اگرانہیں کسی قسم کاکوئی نقصان پہنچاتوایک بہت بڑی بدقسمتی ہوگی۔