54

ہیواوے کے پہلے اے آئی فلیگ شپ فونز پاکستان میں متعارف

چینی کمپنی ہیواوے نے اپنے آرٹی فیشل انٹیلی جنس (اے آئی) چپ سے لیس فلیگ شپ اسمارٹ فونز میٹ 10 اور میٹ 10 پرو پاکستان میں فروخت کے لیے پیش کردیئے ہیں۔
گزشتہ ماہ چین میں ان فونز کو متعارف کرایا گیا تھا اور اب انہیں پاکستان میں فروخت کے لیے پیش کیا گیا ہے اور کمپنی کے توقع ہے کہ جدید ترین ٹیکنالوجی سے لیس یہ فون ایپل اور سام سنگ کے فلیگ شپ فونز کا مقابلہ کرکے انہیں شکست دے سکیں گے۔
یہ ہیواوے کے پہلے فونز ہیں جو کہ لگ بھگ بیزل لیس ہیں جبکہ اے آئی کارکردگی کو بہتر بنایا گیا ہے۔

اسی طرح گزشتہ ماہ جب ان فونز کو پیش کیا گیا تھا تو کمپنی کا کہنا تھا کہ یہ پہلی اسمارٹ فون سیریز ہے جس میں ڈاﺅن لوڈ اسپیڈ 1.2 گیگا بائٹس فی سیکنڈ ہے (تاہم اس کا انحصار موبائل انٹرنیٹ سروس پروائڈر پر ہوگا)۔

ہیواوے میٹ 10 اور میٹ 10 پرو میں فرق بس اسکرین سائز اور فنگر پرنٹ سنسر کی جگہ کا ہے، اس سے ہٹ کر یہ لگ بھگ ایک جیسے فیچرز کے حامل ہیں۔

میٹ 10 فون 5.9 انچ کی ایل سی ڈی کے ساتھ ہے جبکہ میٹ 10 پرو سکس میں انچ فل ایچ ڈی امولیڈ ڈسپلے دیا گیا ہے مگر بیزل لیس ہونے کی وجہ سے وہ چھوٹا لگتا ہے۔
میٹ پرو واٹر پروف ہونے کے ساتھ ساتھ آئی آر ایس بلاسٹر کے ساتھ بھی ہے جبکہ دوسرے فون میں ہیڈ فون جیک اور مائیکرو ایس ڈی کارڈ سلاٹ دیا گیا ہے۔

اس سے ہٹ کر دونوں فونز کے فیچرز ایک جیسے ہیں یعنی کیرین 970 سی بی یو، 4 جی بی ریم، 4000 ایم اے ایچ بیٹری، 64 جی بی اسٹوریج اور بیک پر ڈوئل کیمرے ایف 1.6 لینسز کے ساتھ ۔

اس ڈوئل کیمرہ سیٹ میں ایک کیمرہ بیس میگا پکسل کے کلر سنسر کے ساتھ ہے جبکہ دوسرا 12 میگا پکسل کے مونوکروم سنسر کے ساتھ، جو تصاویر کو سام سنگ کے گلیکسی نوٹ ایٹ یا آئی فون ایکس جتنا بہتر بنانے میں مدد دیتے ہیں۔

میٹ 10 پرو کا ایک سکس جی بی ریم اور 128 جی بی اسٹوریج کا ورڑن بھی دیا گیا ہے جبکہ اس کا پورشے ڈیزائن کے نام سے ایک خصوصی ماڈل بھی ہے جو کہ سکس جی بی ریم اور 256 جی بی ریم کے ساتھ ہوگا۔

دونوں فونز میں یو ایس بی سی دی گئی ہے جبکہ سام سنگ کی طرح ڈیسک ٹاپ سے منسلک کرنے کا آپشن بھی دیا گیا ہے، تاہم دیگر کمپنیوں کے برعکس آپ اس فون کو براہ راست مانیٹر پر کیبل کے ذریعے پلگ کرکے کمپیوٹر کی طرح استعمال کرسکتے ہیں۔

تاہم اس فون کی خاص بات اس کا پراسیسر یا کیرین 970 چپ ہے جو کہ کمپنی نے خود تیار کی ہے اور اس میں نیورول پراسیسنگ یونٹ کو بھی شامل کیا گیا ہے۔

ایپل نے بھی آئی فون ایٹ اور ایکس میں اپنی چپ میں نیورول انجن کو شامل کرنے کا اعلان کیا تھا تاہم ہیواوے نے اسے اپنی ڈیوائس کا اہم ترین فیچر بنایا ہے۔

کمپنی کا دعویٰ ہے کہ یہ فون آئی فون سے بھی زیادہ طاقتور ہے اور اس کی اسپیڈ بھی ناقابل یقین حد تک تیز ہوگی۔

دلچسپ بات یہ ہے کہ چین میں جب یہ فون پیش کیا گیا تو میٹ 10 کی قیمت 699 یورو (86 ہزار 870 روپے)جبکہ میٹ 10 پرو 799 یورو (لگ بھگ ایک لاکھ پاکستانی روپے) رکھی۔

تاہم ہیواوے میٹ 10 پاکستان میں 69 ہزار 999 روپے جبکہ میٹ 10 پرو کی قیمت 87 ہزار 999 روپے میں فروخت کیا جائے گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں