31

شہباز شریف کی گرفتاری؛ اپوزیشن کا قومی اسمبلی کا فوری اجلاس بلانے کا مطالبہ

اسلام آباد: اپوزیشن نے قائد حزب اختلاف شہباز شریف کی گرفتاری پر قومی اسمبلی کا فوری اجلاس طلب کرنے کا مطالبہ کردیا۔

اسلام آباد میں ایاز صادق کی سربراہی میں اپوزیشن اراکین پارلیمنٹ کے وفد نے اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر سے ان کے گھر پر ملاقات کی۔ وفد میں ن لیگ، جے یو آئی (ف) اور جماعت اسلامی کے اراکین شامل تھے۔ اپوزیشن نے اسد قیصر کو شہباز شریف کی گرفتاری پر اپنے تحفظات سے آگاہ کیا اور قومی اسمبلی کا فوری اجلاس بلانے کا مطالبہ کیا۔

ملاقات کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ایاز صادق نے کہا کہ مشاورت کے بعد اجلاس کی ریکوزیشن جمع کرائی اور اسپیکر سے اجلاس جلد بلانے کی درخواست کی، شہباز شریف کو بھی اجلاس میں شرکت کیلئے طلب کیا جائے اور ان کا پروڈکشن آرڈر جاری کیا جائے، دیگر جماعتوں سے بھی رابطے ہوئے ہیں سب کیلئے یہ تشویشناک معاملہ ہے۔

ایاز صادق کا کہنا تھا کہ ن لیگی قیادت کےخلاف سیاسی انتقامی کارروائیاں ہو رہی ہیں جس سے جمہوریت کو نقصان پہنچے گا نیب نے قائد حزب اختلاف کو صاف پانی کیس میں بلاکر آشیانہ کیس میں گرفتار کیا، یہ الیکشن پر اثرانداز ہونے کی کوشش ہے، جب بھی الیکشن یا ضمنی الیکشن آتا ہے مسلم لیگ ن کی قیادت گرفتارہوتی ہے۔

رانا تنویر نے کہا کہ ایسی انتقامی کارروائیاں تو مشرف دور میں بھی نہیں ہوئیں، شہبازشریف کی گرفتاری سے بین الاقوامی طور پر بہت غلط پیغام گیا، حکومت کے پاس وقت ہے سدھر جائے نہیں تو گھر بھیج دیں گے۔

مولانا عبدالغفور حیدری نے کہا کہ حکومت بدترین انتقامی کارروائیوں پراترآئی ہے اور جو کچھ کررہی ہے اس کا انجام اچھا نہیں ہوگا، وزیراعظم کا یہ کہنا قابل افسوس ہے کہ حکومت کی پشت پر عدلیہ، فوج اور نیب کھڑی ہے، یہ سب مل کر ایک پارٹی کے خلاف بزدلانہ کاروائیاں کر رہے ہیں، اپوزیشن اس پر چپ نہیں رہے گی، جو کچھ آج ایک جماعت کے ساتھ ہو رہا ہے کل کسی اور جماعت کے ساتھ بھی ہو سکتا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں