38

جیل میں قید خالدہ ضیاء کی طبیعت ناساز

ڈھاکہ ۔بنگلادیش کی سابق وزیراعظم اور اپوزیشن جماعت بنگلا دیش نیشنل پارٹی کی رہنما خالدہ ضیا کی طبیعت ناساز ہونے پر جیل سے اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔بین الاقوامی میڈیا رپورٹ کے مطابق 73سالہ خالدہ ضیا کو بنگادندہو شیخ میڈیکل یونیورسٹی اسپتال میں داخل کرایا گیا ہے ۔ان کے اسپتال منتقلی کی ڈائریکٹر کلینک بریگیڈیئر جنرل عبداللہ الہارون نے تصدیق کی اور کہا کہ انہیں طبی سہولیات فراہم کی جارہی ہیں۔

کچھ روز قبل خالدہ ضیا کے وکیل کی جانب سے ہائی کورٹ میں موقف اختیار کیا گیا تھا کہ حکومت ان کی صحت کے لیے خصوصی اقدامات نہ اٹھا کر ان کی صحت کو خطرے میں ڈال رہی ہے، جس کے بعد عدالت نے اپوزیشن لیڈر کو اسپتال منتقل کرنے کا حکم دیا تھا۔گزشتہ ماہ بد عنوانی کے مزید الزامات کا سامنا کرنے والی خالدہ ضیاء نے عدالت کو بتایا تھا کہ وہ بہت زیادہ بیمار ہیں اور ان کے ہاتھ اور پاوں مفلوج ہورہے ہیں۔

اپوزیشن لیڈر کے وکیل زین العابدین نے رواں ہفتے بتایا تھا کہ خالدہ ضیا کو غیر سرکاری ہسپتال کے علاوہ اپنی مرضی کا ڈاکٹر منتخب کرسکیں گی۔واضح رہے کہ خالدہ ضیا کو رواں سال فروری میں 5 سال قید کی سزا سنائی گئی تھی، جس کے بعد ان کی پارٹی بنگلا دیش نیشنلسٹ پارٹی کے ہزاروں کارکنوں اور پولیس کے درمیان جھڑپوں کا سلسلہ شروع ہوگیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں