26

ای سی ایل سے نام نکالنے کیلئے نوازشریف کا وزارت داخلہ کو خط

اسلام آباد: سابق وزیراعظم نوازشریف، مریم نواز اور کیپٹن (ر) صفدر نے ای سی ایل سے نام نکالنے کیلئے وزارت داخلہ سے رابطہ کیا ہے۔

سابق وزیراعظم نوازشریف، مریم نواز اور کیپٹن (ر) صفدر کی جانب سے سیکرٹری داخلہ کو الگ الگ خط لکھے گئے ہیں جس میں کہا گیا ہے کہ ای سی ایل میں نام ڈال کر آئین کے آرٹیکل 4، 15 اور 25 کی خلاف ورزی کی گئی، احتساب عدالت نے کرپشن کے الزام سے بری کیا اور نیب کرپشن کے الزامات ثابت کرنے میں ناکام رہا جب کہ اسلام آباد ہائی کورٹ نے اسی بنیاد پر سزا معطل کی۔

خط میں مزید کہا گیا ہے کہ ہائیکورٹ نے ضمانت پر رہائی کا حکم دیتے ہوئے کوئی پابندی نہیں لگائی اور کسی بھی عدالت نے نام ای سی ایل میں ڈالنے کا حکم نہیں دیا، خط میں موقف اپنایا گیا ہے کہ ہم قانون پر عملدر آمد کرنے والے شہری ہیں، احتساب عدالت نے عدم موجودگی میں سزا سنائی تاہم بیرون ملک سے رضا کارانہ طور پرواپس آکر گرفتاری دی۔

خطوط میں استدعا کرتے ہوئے کہا گیا ہے کہ تینوں نے عدالت کے سامنے پیش ہونے کے بانڈز جمع کروا رکھے ہیں لہذا تینوں کے نام ای سی ایل سے نکالے جائیں۔ نوازشریف، مریم نواز اور کیپٹن (ر) صفدر کی جانب سے 4 اکتوبر کو وزارت داخلہ کو درخواست دی گئی تھی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں