43

ایس پی طاہر داوڑ قتل؛ ذمہ داران کو کیفرکردار تک پہنچائیں گے، شہریار آفریدی

اسلام آباد: وزیرمملکت برائے داخلہ شہریار آفریدی کا کہنا ہے کہ ایس پی طاہر داوڑ کے واقعے کے ذمہ داران کو کیفرکردار تک پہنچائیں گے۔

سینیٹ میں ایس پی طاہر داوڑ سے متعلق پالیسی بیان دیتے ہوئے وزیرمملکت داخلہ شہریار آفریدی کا کہنا تھا کہ طاہرداوڑ پاکستان کے وہ غیرت مند بیٹے تھےجن پردو دفعہ حملے ہوئے،ان کے بھائی اور بھابھی کو بھی شہید کیا گیا اور طاہرداوڑکو دھمکیاں بھی موصول ہوتی تھیں جب کہ طاہر داوڑ کا اہلخانہ کو آخری پیغام تھا کہ میں محفوظ ہوں، آپ پریشان مت ہوں اور پھر 28 اکتوبرکوطاہرداوڑ کے لاپتہ ہونے کی ایف آئی آردرج کی گئی۔

شہریار آفریدی نے کہا کہ ایس پی طاہر داوڑ کا قتل تکلیف دہ واقعہ ہے اور یہ واقعہ پولیس کیلئے ایک سوالیہ نشان ہے تاہم ریاست کا وعدہ ہے جو واقعے کے ذمہ دار ہیں انہیں کیفرکردارتک پہنچائیں گے جب کہ وزیراعظم نے بھی اس واقعے کی رپورٹ طلب کرلی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اسلام آباد میں لگنے والے سیکیورٹی کیمرے غیرمعیاری اورناکارہ ہیں، ان کیمروں پر قوم کا پیسہ ضائع کیا گیا، ان کی تحقیقات ہونی چاہیے۔

واضح رہے اسلام آباد سے لاپتہ ہونے والے خیبرپختونخوا کے پولیس افسر طاہر خان داوڑ کی لاش افغانستان سے ملی تھی جب کہ افغان وزارت خارجہ نے بھی ایس پی طاہر خان کی لاش اور سروس کارڈ ملنے کی تصدیق کردی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں