22

بھارتی اداکارہ شلپا شندے پاکستان میں پرفارمنس کرنے کو بے قرار

معروف بھارتی اداکارہ و ماڈل شلپا شندے نے کہا ہے کہ وہ پیسے کمانے کی خاطر پاکستان میں ضرور پرفارمنس کریں گی۔

متنازع ریئلٹی شو ’بگ باس‘ کے گیارہویں سیزن کی فاتح شلپا شندے نے پاکستان میں پرفارمنس کی خواہش ظاہر کرتے ہوئے واضح کیا کہ فنکار کی کوئی سرحد نہیں ہوتی، انہیں پڑوسی ملک میں پرفارمنس سے روکنے والے سچے محب وطن نہیں۔

’ٹائمز آف انڈیا‘ کو دیے گئے خصوصی انٹرویو میں شلپا شندے نے واضح کیا کہ اگر انہیں بھارتی حکومت نے پاکستان جانے کے لیے ویزا جاری کیا تو وہ ضرور پڑوسی ملک جاکر پرفارمنس کریں گی۔ شلپا شندے کا کہنا تھا کہ فنکاروں کی کوئی سرحد نہیں ہوتی اور فنکاروں پر پرفارمنس کی وجہ سے پابندی لگانے والی تنظیموں کو فنکاروں کا روزگار کم کرنے پر شرم آنی چاہیے۔

اداکارہ نے حال ہی میں بھارتی فلم تنظیم کی جانب سے گلوکار میکا سنگھ پر پاکستان میں پرفارمنس کرنے پر لگائی گئی وقتی پابندی پر تنظیم کو آڑے ہاتھوں لیا اور کہا کہ تنظیم کو کوئی حق نہیں پہنچتا کہ وہ کسی فنکار کو روزگار کرنے سے روکے۔

فنکار کا ہر ملک میں کام کرکے پیسے بنانا ہی کام ہے، اداکارہ—فوٹو: انسٹاگرام

شلپا شندے نے دعویٰ کیا کہ فلمی تنظیم نے میکا سنگھ کو پاکستان میں پرفارمنس کرنے پر تشدد کرکے معافی مانگنے پر مجبور کیا۔

ساتھ ہی اداکارہ نے کہا کہ فنکار کی مرضی ہے کہ وہ سڑک پر پرفارمنس کرکے پیسے کمائے یا پھر پڑوسی ملک پاکستان جاکر پیسے کمائے، تنظیم کون ہوتی ہے فنکار پر پرفارمنس کرنے اور انہیں پیسے کمانے سے روکنے والی؟

شلپا شندے کے مطابق بھارت کی فلمی تنظیموں کو جو کام کرنے چاہیے وہ نہیں کر رہیں۔ بھارتی اداکارہ کا کہنا تھا کہ انہیں محب وطن ہونے کے لیے پاکستان سے نفرت یا پاکستان کے خلاف نعرے لگانے کی ضرورت نہیں۔ انہوں نے اعتراف کیا کہ انہیں ایک کامیاب اداکارہ بنانے میں پاکستانی مداحوں کا بھی کردار ہے اور ان کے کئی دوست پاکستان میں رہتے ہیں، جن سے وہ تحائف کا تبادلہ کرتی ہیں۔

شلپا شندے نے ایک سوال کے جواب میں واضح کیا کہ اگر انہیں کبھی بھی پاکستان سے پرفارمنس کی پیش کش ہوئی اور بھارتی حکومت نے ویزا جاری کیا تو وہ ضرور پڑوسی ملک جا کر پرفارمنس کریں گی، انہیں ایسا کرنے سے کوئی روک نہیں سکتا۔

پاکستان سے نفرت کرنا محب وطن ہونے کی نشانی نہیں ہے، اداکارہ—فوٹو: انسٹاگرام

اداکارہ نے پاکستان اور پاکستانی فنکاروں سے نفرت کرنے والوں کو کرارا جواب دیتے ہوئے کہا کہ اگر انہیں پڑوسی ملک کے فنکاروں سے اتنی ہی نفرت ہے تو وہ نصرت فتح علی خان کو سننا کیوں نہیں چھوڑ دیتے؟

انہوں نے ماضی میں بھارت میں فواد خان اور ماہرہ خان کو بولی وڈ فلموں میں کام دیے جانے پر دلیل دی کہ اب جو لوگ پاکستانی فنکاروں اور پاکستان سے نفرت کر رہے ہیں، وہ بتائیں کہ ماضی میں کیوں ماہرہ اور فواد کو کاسٹ کیا گیا؟

انہوں نے سوال کیا کہ کیا بھارت میں ماہرہ خان جیسی خوبصورت ہیروئن نہیں تھی کہ شاہ رخ خان نے انہیں کاسٹ کیا؟ شلپا شندے کے مطابق پاکستان اور بھارت کے عوام میں سے کوئی بھی جنگ نہیں چاہتا، ہمیں ایک دوسرے سے نفرت کرنے کے بجائے ایک دوسرے کا احترام کرنا چاہیے۔

خیال رہے کہ شلپا شندے نے 2001 میں اداکاری کی شروعات کی اور اب تک وہ کم سے کم 30 ڈراموں میں کام کرچکی ہیں، جب کہ انہوں نے تامل فلموں میں بھی کام کیا ہے۔

پاکستان سے پرفارمنس کی پیش کش ہوئی تو ضرور جاؤں گی، اداکارہ—فوٹو: انسٹاگرام

شلپا شندے نے بولی وڈ فلم ‘پٹیل کی پنجابی شادی’ میں مختصر کردار ادا کیا ہے، تاہم ان کا شمار بھارت کی معروف اور متنازع اداکاراؤں میں ہوتا ہے۔ اداکارہ نے پاکستان آ کر پرفارمنس کرنے کی خواہش ایک ایسے وقت میں کی ہے جب کہ دونوں ممالک میں کشیدگی جاری ہے۔

پاکستان اور بھارت کے درمیان حالیہ کشیدگی اس وقت بڑھی جب بھارت نے 5 اگست 2019 کو مقبوضہ کشمیر کو خصوصی حیثیت دینے والے آئین کے آرٹیکل 370 کو ختم کرکے اسے اپنے ماتحت بنانے کا اعلان کیا۔

اس اقدام کے بعد بھارت کو عالمی سطح پر بھی تنقید کا سامنا ہے جب کہ وادی کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کرنے پر کئی بھارتی اداکار بھی مودی حکومت کو تنقید کا نشانہ بنا چکے ہیں۔

شلپا شندے سے قبل گلوکار میکا سنگھ سے متعلق خبریں تھیں کہ وہ رواں ماہ 10 اگست کو پاکستان پرفارمنس کرنے آئے تھے، جس پر بھارتی فلم تنظیم نے ان پر عارضی پابندی لگائی تھی۔ بعد ازاں میکا سنگھ کی جانب سے معافی مانگے جانے پر بھارتی تنظیم نے ان پر عائد پابندی ختم کردی تھی۔

اگر بھارتیوں کو پاکستانیوں سے اتنی ہی نفرت ہے تو نصرت فتح کو سننا چھوڑ دیں، اداکارہ—فوٹو: انسٹاگرام

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں