32

زلزلہ کے بعد منگلا پاور ہاؤس بند ٗ بدترین لوڈشیڈنگ کا خدشہ

اسلام آباد: زلزلے کے بعد منگلا پاور ہاؤس بند کردیا گیا ہے جس کے باعث متعدد شہروں میں لوڈ شیڈنگ کا خدشہ پیدا ہوگیا ہے۔

پنجاب کشمیر اور خیبرپختون خوا میں آنے والے شدید زلزلے کے بعد منگلا ڈیم کے پاور ہاؤس کے ٹربائنز بند ہو گئے ہیں اور پاور ہاوس بند ہونے سے متعدد شہروں میں بجلی کی فراہمی متاثر ہونے کا خدشہ ہے۔

ذرائع واپڈا نے بتایا ہے کہ منگلا پاور ہاوس 920 میگاواٹ بجلی پیدا کررہا تھا، تاہم زلزلے کے بعد پانی گدلا ہوگیا ہے اورحفاظتی اقدامات کے پیش نظر منگلا پاور ہاؤس کی ٹربائنیں بند کردی گئی ہیں، پاور ہاؤس کے ٹربائنز بند ہونے سے 920 میگاواٹ بجلی سسٹم سے نکل گئی، جس کے باعث ملک کے متعدد شہروں میں بدترین لوڈشیڈنگ کا خدشہ پیدا ہوگیا ہے، تاہم پانی صاف ہونے پر منگلا پاور ہاؤس کی ٹربائنوں کو دوبارہ چلا دیا جائے گا۔

دوسری جانب ترجمان وزارت توانائی نے بیان جاری کیا ہے کہ ملک میں بجلی کی سپلائی اس وقت پوری ہے اور تمام بجلی تقسیم کار کمپنیاں ضرورت کے مطابق سسٹم سے بجلی لے رہی ہیں، ‏اسلام آباد اور گوجرانوالہ الیکٹرک سپلائی کمپنیوں کا بجلی سپلائی کا نظام اس وقت بالکل بحال ہے اور ونوں کپمنیاں اس وقت ضرورت کے مطابق بجلی لے رہی ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں