28

دھماکے میں جاں بحق جے یو آئی رہنما سپرد خاک، صوبے میں ہڑتال

صوبہ بلوچستان کے سرحدی علاقے چمن میں ہونے والے دھماکے میں جاں بحق جمعیت علمائے اسلام (ف) کے رہنما مولوی محمد حنیف کو سپرد خاک کردیا گیا جبکہ پارٹی کی کال پر صوبے بھر میں شٹر ڈاؤن ہڑتال کی گئی۔

خیال رہے کہ ایک روز قبل چمن میں ہونے والے بم دھماکے کے نتیجے میں جاں بحق ہونے والے جمعیت علمائے اسلام (ف) کے مرکزی ڈپٹی سیکریٹری مولوی محمد حنیف کی نماز جنازہ میں اہم سیاسی شخصیات اور پارٹی کارکنان سمیت ہزاروں افراد نے شرکت کی۔

اس موقع پر جے یو آئی (ف) کے صوبائی امیر مولانا عبدالواسع، پشتونخوا ملی عوامی پارٹی (پی کے میپ) کے صوبائی صدر سینیٹر عثمان خان کاکڑ، عوامی نیشنل پارٹی (اے این پی) کے صوبائی صدر اور بلوچستان اسمبلی میں پارلیمانی لیڈر اصغر خان اچکزئی نے شرکت کی۔

علاوہ ازیں رکن قومی اسمبلی مولانا صلاح الدین، کرنل خرم جاوید، ڈپٹی کمشنر چمن بشیر خان اور ڈسٹرکٹ پولیس افسر (ڈی پی او) شوکت مہمند سمیت مختلف مکاتب فکر سے تعلق رکھنے والے افراد نے نماز جنازہ میں شرکت کی۔ جے یو آئی (ف) کے مرکزی رہنما کو چمن میں ہی سپرد خاک کیا گیا۔

اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے ڈپٹی کمشنر بشیر خان کا کہنا تھا کہ اس واقعے کے ذمہ داران جلد قانون کی گرفت میں ہوں گے جنہیں کیفر کردار تک پہنچا کر ہی دم لیں گے۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ امن و امان کی صورتحال برقرار رکھنے کے لیے تمام سیکیورٹی ادارے ہائی الرٹ ہیں۔

خیال رہے کہ جمعیت علمائے اسلام کی کال پر چمن کے ساتھ ساتھ کوئٹہ اور حب سمیت تقریباً تمام اضلاع میں شٹر ڈاؤن ہڑتال کی گئی جبکہ تمام کاروباری مراکز بھی بند رہے۔ چمن دھماکے کا مقدمہ سی ٹی ڈی تھانے میں درج

ادھر چمن میں ہونے والے بم دھماکے کا مقدمہ محکمہ انسداد دہشت گردی (سی ٹی ڈی) تھانے میں درج کرلیا گیا۔ اسسٹنٹ کمشنر چمن یاسر اقبال دشتی کے مطابق یہ مقدمہ ایس ایچ او چمن کی مدعیت میں درج ہوا۔

انہوں نے بتایا کہ دھماکے کے بعد چمن شہر کے علاوہ پاک افغان سرحد پر سیکیورٹی کے سخت انتظامات کر لیے گئے جبکہ پولیس اور دیگر اداروں کی جانب سے تحقیقات کا عمل بھی جاری ہے۔

ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ دھماکے میں مختلف محرکات پر تفتیش جاری ہے جبکہ اب تک کوئی گرفتاری عمل میں نہیں آئی- واضح رہے کہ 28 ستمبر کو بلوچستان کے سرحدی علاقے چمن میں بم دھماکے کے نتیجے میں جے یو آئی (ف) کے ڈپٹی سیکریٹری جنرل مولوی حنیف سمیت 3 افراد جاں بحق ہوگئے تھے۔

حملے سے متعلق پولیس نے بتایا تھا کہ چمن میں بم دھماکے میں جے یو آئی (ف) کے ڈپٹی سیکریٹری جنرل مولوی حنیف کو نشانہ بنایا گیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں